☰  
× صفحۂ اول (current) دین و دنیا(حاجی محمد حنیف طیب) دنیا اسپیشل(صہیب مرغوب) متفرق(احمدعلی محمودی ) خصوصی رپورٹ(پروفیسر عثمان سرور انصاری) خصوصی رپورٹ(سید عبداللہ) فیشن(طیبہ بخاری ) کچن کی دنیا() صحت(ڈاکٹر آصف محمود جاہ ) سپیشل رپورٹ(ایم آر ملک) فیچر(نصیر احمد ورک) انٹرویوز(مرزا افتخاربیگ) کھیل(محمد سعید جاوید)
Dunya Magazine
Loading...
Loading...
Loading...

دیگر خصوصی مضامین اور مستقل سلسلے

درودشریف کی قبولیت میں کوئی شک نہیں ہے ۔ درودشریف اﷲتعالیٰ کے دربارمیں یقینا قبول ہوتاہے ،اس میں اﷲتعالیٰ کے سب سے محبوب بندے پردُرودوسلام پیش کیاجاتاہے۔ دُرود شریف کی اہمیت کا اندازہ ہم کچھ احادیث کی روشنی میں دیکھتے ہیں ۔حضورپاک ﷺنے فرمایا،    

مزید پڑھیں

 بھارتی حکومت کود رپیش مالی بحران روز بروز شدت اختیار کرتا جا رہا ہے،سرمائے کی کمی ہر منصوبے کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ بن گئی ہے۔  

مزید پڑھیں

 جنوری 2020ء میں ایک نئی قسم کی کروناوائرس Coronavirusچین کے علاقے ووہانWuhanمیں دریافت کی گئی ہے ، جس سے ووہان کے مقیم کچھ باشندوں میں نمونیا کی علامات پیدا ہوئیں ۔    

مزید پڑھیں

انسان کی نسل درنسل مسلسل مجموعی زندگی کا تسلسل بھی ریل گاڑی کے آپس میں جڑے ہوئے ڈبوں کی طرح ہے ،وقت جس طرح زندگی کو سفر میں رکھتا ہے    

مزید پڑھیں

پشاورمیٹرو پراجیکٹ ڈیڈلائن پوری نہ ہونے کی وجہ سے مسلسل ہیڈلائنز میں رہتا ہے ۔ وزیراعظم عمران خان نے اِس معاملہ پر چُپ سادھ لی ہے ۔    

مزید پڑھیں

محبت روشنی ہے جگمگانا چاہتی ہوں     

مزید پڑھیں

بیف اسٹو اجزاء:اُبلابیف1/2کلو،نمک ایک چائے کا چمچ،میدہ دو کھانے کے چمچ،کُٹی کالی مرچ دو چائے کے چمچ،مکھن پچاس گرام، مشروم ایک کپ،یخنی چار کپ،ٹماٹر کا پیسٹ 1/2 کپ، تھائم 1/2چائے کا چمچ،بیزل1/2چائے کا چمچ اوریگانو1/2چائے کا چمچ، پسا گرم مصالحہ1/2چائے کا چمچ،چھوٹے آلو چار عدد،گاجر ایک عدد، مٹر ایک کپ،پیاز ایک عدد،ہرا دھنیا دو کھانے کے چمچ،پسا لہسن ایک چائے کا چمچ،تیل حسبِ ضرورت ترکیب:تیل اور مکھن گرم کر کے پیاز بھو ن لیں۔اب اس میں نمک،میدہ ،کالی مرچ،لہسن اور گوشت اچھی طرح بھون لیں ،پھر اس میں تھائم،بیزل،اوریگانو،ٹماٹر کا پیسٹ،مشروم،گاجر،آلو،یخنی اور مٹر ڈال کر دھیمی آنچ پر ایک گھنٹہ پکنے دیں۔آخر میں ہرا دھنیا اور گرم مصالحہ چھڑک کر پیش کریں۔    

مزید پڑھیں

 آپ کے کچن میں بے شمار ایسی جڑی بوٹیاں اور مصالحہ جات ہیں جو آپ کی بیماری کا علاج ہیں۔ ہلدی، دار چینی، شہد، پودینہ، الائچی، لونگ، زیتون کا تیل بہت سی بیماریوں اور ان کی علامات میں اکسیر کا کام کرتی ہیں۔    

مزید پڑھیں

ایوب کادور تھا ۔مغربی پاکستان کی گورنری کے تخت پر گورنر امیر محمد خان نواب آف کالاباغ براجمان تھے ۔امیر محمدخان کی دبنگ شخصیت اوران کی مونچھوں کے اندازِ حکمرانی سے بڑے بڑوں کاپتہ پانی ہوجاتاتھا۔مونچھوں کو تائو دیتے ہوئے وہ کہا کرتے کہ میری دائیں مونچھ قانون ہے اور بائیں مونچھ آرڈر، اُن کے دورِ اقتدار میں چینی کاریٹ اڑھائی روپے کلو ہوا تو چینی مارکیٹ سے غائب ہوناشروع ہوگئی ۔    

مزید پڑھیں

 پاکستانی شہری جس کوکبھی پاکستان سے باہر سفر کرنے کا موقع نہیں ملا وہ پردیس رہنے والوں کے حالات زندگی، واقعات اور مسائل سے ہرگز واقف نہیں ہو سکتا،جو افراد سیرو سیاحت کے شعبہ سے بھی منسلک رہے ہوں اس بات کو بخوبی سمجھتے ہیں کہ آج سے ایک یا دو صدی قبل دنیا کا سفر کرنا خواہ وہ سیرو سیاحت کیلئے ہو یا کاروباری نہایت آسان اور پرسکون ہوتا تھا اس کی وجہ یہ تھی کہ دنیا کے کسی بھی ملک کے شہری کو سفری دستاویزات حاصل کرنے اور پھر مخصوص ملک کے سفر کیلئے متعلقہ سفارت خانہ سے سفری اجازت نامہ جس کو آج ویزا کے نام سے جانا جاتا ہے کا پیشگی حصول اس قدر کٹھن نہیں تھا تب مختلف ممالک کے مابین اس قدر سرمایہ کاری کی سرد جنگ برپا نہیں تھی، دہشت گردی کا ایشو نہیں تھا ۔ جب مسلمانوں کو دہشت گردی کے ساتھ نہیں جوڑا گیا تھا ۔ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ سرمایہ دارانہ نظام بھی تقویت پکڑتا گیا، سودی نظام کی دلدل میں پھنسی عالمی معیشت بھی سکڑتی گئی ۔    

مزید پڑھیں

 ڈرامہ انڈسٹری میں اسوقت باصلاحیت فنکار موجود ہیں ،اکثر بڑی فنکارائوں کی اولین ترجیح فلم ہے۔ اس صورتحال میں ٹی وی اداکارہ و ماڈل عائزہ خان سب سے جدا ہیں۔    

مزید پڑھیں

پرانے زمانے میں زندگی بڑی سادہ سی تھی ۔ جہاں دل کیا، چند لوگ بیٹھ کر خوش گپیوں میں مشغول ہو جاتے یا سڑک پر ہی لڈو ، تاش اور دوسرے اسی قسم کے کھیلوں کی منڈلی سجا لیتے۔    

مزید پڑھیں

تین گروہ

ایک قافلہ دوران سفر ایک صحرا میں پہنچا۔ وہاں انہوں نے خدا کے ایک برگزیدہ بندے کو دیکھاکہ میدان میں تپتی ریت پر نماز کی نیت باندھے اس طرح کھڑا ہے جیسے کوئی صحن گلستان میں پہنچ کر مست و بے خود ہو جاتا ہے۔گرمی کی تپش اتنی تھی دیگ کا پانی جوش مارنے لگے لیکن برگزیدہ بندہ نماز میں اپنے پروردگار سے راز و نیاز کرتا ہوا گہری فکر میں غرق تھا۔بہت دیر بعد جب وہ معرفت کی گہرائی میں سے ابھر کر آیا تو حاجیوں نے دیکھا کہ اس کے بازئووں اور چہرے سے پانی کے قطرے ٹپک رہے ہیں۔جیسے ابھی ابھی وضو کیاہو۔ انہوں نے پوچھا ،یہ پانی کہاں سے آیا؟ زاہد نے آسمان کی طرف ہاتھ اٹھا کر جواب دیا ،اوپر سے۔ لوگوں نے پھر عرض کیا کہ یہ پانی جب آپ کی خواہش ہوتی ہے تب ملتا ہے یا کبھی یہ خواہش قبول نہیں ہوتی؟ مردِ فقیر نے آسمان کی جانب نگاہ کی اور کہا ’’اے میرے خالق! ان حاجیوں کی سن۔ ان کے سینے کھول دے اور حق ان پر واضح کر۔ تو نے چونکہ اپنے رحم و کرم سے مجھ پر اس بلندی سے دروازہ کھولا ہے اس لیے میں بلندی سے اپنا رزق مانگنے کا عادی ہوگیا ہوں۔‘‘زاہد اپنے رب سے یہ عرض کر رہی رہا تھا کہ یکایک ایک جانب سے کالی گھٹا اٹھی اور دیکھتے دیکھتے چھاجوں مینہ برسنے لگا۔ پیاسے لوگوںکی تو عید ہوگئی۔ انہوں نے جھٹ پٹ اپنے اپنے مشکیزے بھر لیے۔ اس مرد درویش کی یہ کرامت دیکھ کر ایک گروہ نے اپنے دلوں میں جو بت خانے سجا رکھے تھے ،وہ ڈھا دیئے۔ دوسرے گروہ کے دل میں خدا کی قدرت اور اللہ والوں کی قوت پر یقین کامل ہوا۔ تیسرا گروہ منکروں کا تھا۔ یہ بدنصیب کچے پھل کی مانند ترش کے ترش ہی رہے اور ان کا نقص ہمیشہ قائم رہا۔    

مزید پڑھیں

محبت روشنی ہے جگمگانا چاہتی ہوں ۔۔۔۔

دنیا فیشن

ماڈل: انیسہ
فوٹو گرافی : عامر چشتی
میک اپ : K R CREW