☰  
× صفحۂ اول (current) فیشن(طیبہ بخاری ) متفرق(خالد نجیب خان) دین و دنیا(مولانا محمد الیاس گھمن) روحانی مسائل(مولانا محمد یونس پالن پوری) دنیا اسپیشل(صہیب مرغوب) صحت(ڈاکٹر آصف محمود جاہ ) سنڈے سپیشل(طیبہ بخاری ) خصوصی رپورٹ(ایم آر ملک) سپیشل رپورٹ(عبدالحفیظ ظفر) کچن کی دنیا خواتین(نجف زہرا تقوی)
چاند چہرہ ستارہ آنکھیں ۔۔۔۔

چاند چہرہ ستارہ آنکھیں ۔۔۔۔

تحریر : طیبہ بخاری

03-22-2020

 عبیداللہ علیم نے کیا خوب لکھا تھا کہ 

 

 

مرے خدایا ! میں زندگی کو عذاب لکھوں کہ خواب لکھوں 
یہ میرا چہرہ ، یہ میری آنکھیں 
بجھے ہوئے سے چراغ جیسے
جو پھر سے جلنے کے منتظر ہوں 
وہ چاند چہرہ ، ستارہ آنکھیں 
وہ مہرباں سایہ دار زُلفیں 
جنہوں نے پیماں کیے تھے مجھ سے 
رفاقتوں کے ، محبتوں کے 
کہا تھا مجھ سے کہ اے مسافر رہِ وفا کے 
جہاں بھی جائے گا ہم بھی آئیں گے ساتھ تیرے 
بنیں گے راتوں میں چاندنی ہم تو دن میں سائے بکھیر دیں گے 
وہ چاند چہرہ ، ستارہ آنکھیں 
وہ مہرباں سایہ دار زُلفیں 
ہزاروں چہروں ، ہزاروں آنکھوں 
ہزاروں زُلفوں کا ایک سیلاب ِ تند لے کر 
مرے تعاقب میں آ رہے ہیں 
ہر ایک چہرہ ہے چاند چہرہ 
ہیں ساری آنکھیں ستارہ آنکھیں
تمام ہیں ، مہربان اور سایہ دار زُلفیں  
صدف کہتی ہیں ’’ گرم ملبوسات ، گرم مشروبات ، خوبصورت ساتھ، حسین نظارے یہ سب موسم سرما کی خاصیتیں ہیں،سرد ہوائیں موڈ کو خوشگوار بناتی ہیں جس سے دل چاہتا ہے کہ رنگوں سے بھری دنیا کو اپنے اندر سمیٹ لیا جائے ۔جو لوگ موسم سرما کو بھرپور انجوائے کرنا چاہتے ہیں وہ سیاحت ضرور کریں ۔ بیرون ملک جانے کی ضرورت نہیں ہمارا ملک قدرتی مناظر کی دولت سے مالا مال ہے ، مری ، سوات اور کالام کی خوبصورتی کو کون بھول سکتا ہے ۔ اگر آپ خود کو خوبصورت اور سلم سمارٹ رکھنا چاہتی ہیں تو سیاحت کو اپنا مشغلہ بنائیں ۔
ماڈلنگ کرنا اتنا آسان نہیں جتنا آج کل کی لڑکیوں نے سمجھ رکھا ہے ،پہلے آپ صرف شوق کے تحت ماڈلنگ کرتے تھے مگر اب یہ باقاعدہ انڈسٹری کا روپ دھار چکی ہے ۔ محنت اور قابلیت کے باعث ماڈلنگ کی دنیا میں نت نئی تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں ۔اگر آپ ماڈل بننا چاہتی ہیں تو اس کیلئے  شخصیت ، فٹنس اور ملبوسات کے انتخاب میں انتہائی محتاط ہونا پڑے گا کیونکہ آپ کا لباس جس قدر منفرد اور آپ کی شخصیت جس قدر جاذب ِ نظر ہو گی اتنا ہی نکھار آئے گا ۔ میں نے ماڈلنگ کو شوق نہیں چیلنج کے طور پر اپنایا ہے ۔آج کی ملاقات میں ،مَیں نے اپنی پسند کے مطابق کچھ کولیکشن آپ کی خدمت میں پیش کی ہے ، امید ہے آپ کو پسند آئے گی ۔‘‘
 

گذشتہ شماروں سے پڑھیں

  احمد فراز نے کیا خوب کہا تھا کہ رت جگے ہوں کہ بھرپور نیند یں مسلسل اُسے دیکھنا وہ جو آنکھوں میں ہے اور آنکھوں سے اوجھل اُسے دیکھنا اِس کڑی دھوپ میں دل تپکتے ہیں اور بام پر وہ نہیں کل نئے موسموں میں جب آئیں گے بادل اُسے دیکھنا وہ جو خوشبو بھی ہے اور جگنو بھی ہے اور آنسو بھی ہے جب ہَوا گنگنائے گی ناچے گا جنگل اُسے دیکھنا

مزید پڑھیں

  یہ احمد فراز جیسے شاعر کا ہی کما ل تھا کہ وہ موسم کی حدت اور شدت کو اپنے الفاظ میں کس خوبصورتی سے بیان کرتے تھے دیکھو پگھلا پگھلا سونا بہہ نکلا کہساروں سے دیکھو بھینی بھینی خوشبو آتی ہے گلزاروں سے دیکھو نیلے نیلے بادل جُھول رہے ہیں جھیلوں پر تم بھی سُندر سُندر سپنوں کی لہروں پر بہہ جائو اور ذرا کچھ لمحے ٹھہرو اور ذرا رہ جائو

مزید پڑھیں

 میر تقی میر نے کیا خوب کہا تھا کہ گل کو محبوب ہم قیاس کیا فرق نکلا بہت جو پاس کیا دل نے ہم کو مثالِ آئینہ ایک عالم کا روشناس کیا کچھ نہیں سوجھتا ہمیں اُس بن شوق نے ہم کو بے حواس کیا

مزید پڑھیں