☰  
× صفحۂ اول (current) سنڈے سپیشل(طیبہ بخاری ) سنڈے سپیشل(صہیب مرغوب) رپورٹ(طاہر اصغر) کھیل(طیب رضا عابدی ) کھیل(عبدالحفیظ ظفر) فیشن(طیبہ بخاری ) صحت(محمد ندیم بھٹی) دین و دنیا(مولانا محمد الیاس عطار قادری) دین و دنیا(مولانا فضل الرحیم اشرفی) دین و دنیا(مولانا مجیب الرحمن انقلابی) دین و دنیا(ڈاکٹر لیاقت علی خان نیازی) متفرق(ناصر محمود بیگ) خواتین() کیرئر پلاننگ(پرفیسر ضیا ء زرناب) ادب(الیکس ہیلی ترجمہ عمران الحق چوہان)
پردہ۔۔۔ اطمینان ِ قلب اور روحانی سکون کا ذریعہ

پردہ۔۔۔ اطمینان ِ قلب اور روحانی سکون کا ذریعہ

تحریر : طیبہ بخاری

05-26-2019

موناکہتی ہیں ’’یہ مناسب نہیں لگتا کہ صرف رمضان المبارک کا مہینہ آئے اور ہم پردے کی بحث میںالجھ جائیں ، میں ایسی باتوں میں اپنا وقت اوردماغ خرچ نہیں کرتی ۔

 

پردے کا احساس روح تک پہنچنا چاہئے اگر آپ میں انسانیت کا احترام ، غریبوں ، مسکینوں ، یتیموں کے حقوق کے تحفظ اور کفالت کی ذمہ داری نہیں تو آپ میں کوئی پردہ ، کسی کا احترام اور کسی فرض کا احساس نہیں ۔ میری نظر میں پردہ یا تو ہے یا نہیں ہے اس لئے میں تو سال بھر پردے ، احساس ، ذمہ د اریوں اور حقوق کی ادائیگی کی بات کرنا پسند کرونگی ، سکارف اور عبایا میرے لباس کا ہی نہیں میری شخصیت کا حصہ ہیں اور میں اپنی شخصیت کو وقت کے ساتھ نہیں بدلتی۔

رمضان المبارک میں سکارف اور عبایا کے استعمال سے آپ کو عبادات کے دوران روحانی سکون ، اطمینان ِ قلب اورپردے کا احساس ملتا ہے اس لئے میں یہ میری اولین پسند ہیں اور سال بھرمیری عبادات کا مخصوص لباس ۔۔۔آج ’’دنیا ‘‘ سے ملاقات میں میں نے یہ چاہا کہ اس مقدس ماہ کے دو عشرے مکمل ہونے کو ہیں اور آپ سب اعتکاف کی عظیم عبادات کی تیاریوں میں مصروف ہوں گی ، تو کیوں نہ آپ سب سے گذارش کی جائے کہ سکارف اور عبایا کو اپنی اس عظیم عبادت کا حصہ ضرور بنائیں ، آپ کو وہ دلی راحت وسکون نصیب ہو گا جس کا اظہار لفظوں میں بیان کرنا ممکن نہیں ، اسے صرف محسوس کیا جا سکتا ہے ۔ میں تو پردے کے روحانی سکون سے فیض حاصل کرتی ہوں امید ہے آپ بھی اپنی زندگی کو اس روحانی سکون سے ضرور مزین کریں گی ۔ ‘‘

گذشتہ شماروں سے پڑھیں

بشیر بدر نے شاید یہ غزل آجکل کے حالات کیلئے ہی کہی تھی کہ    

مزید پڑھیں

 عبیداللہ علیم نے کیا خوب لکھا تھا کہ     

مزید پڑھیں