☰  
× صفحۂ اول (current) عالمی امور سنڈے سپیشل کھیل کچن کی دنیا خواتین فیشن فیچر متفرق دین و دنیا ادب کیرئر پلاننگ
خوشبو کی طرح پھیل چمن تا بہ چمن تُو۔۔۔۔۔۔

خوشبو کی طرح پھیل چمن تا بہ چمن تُو۔۔۔۔۔۔

تحریر : طیبہ بخاری

06-09-2019

اقراء عزیز کہتی ہیں ’’ رنگوں کے بناء زندگی ادھوری ہے ، جو لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ موسم گرما میں رنگ روٹھ جاتے ہیں یا گہرے رنگوں کا استعمال نہیں کرنا چاہئے تو میں انہیں یہ مشورہ دینا چاہوں گی کہ سارے موسم من کے موسم ہوتے ہیں ،

غزلوں کی دھنک اوڑھ مرے شعلہ بدن تُو

ہے میراسخن تُو ۔۔مرا موضوع ِ سخن تُو

کلیوں کی طرح پھوٹ سرِ شاخِ، تمنا

خوشبو کی طرح پھیل چمن تا بہ چمن تُو

نازل ہو کبھی ذہن پہ آیات کی صورت

آیات میں ڈھل جا کبھی جبریل دہن تُو

اب کیوں نہ سجائوں میں تجھے دیدہ و دل میں

لگتا ہے اندھیرے میں سویرے کی کِرن تُو

پہلے نہ کوئی رمزِ سخن تھی نہ کنایہ

اب نقطہ تکمیل ِ ہُنر، محورِ فن تُو

یہ کم تو نہیں تُو مِرا معیار نظر ہے

اے دوست میرے واسطے کچھ اور نہ بن تُو

ممکن ہو تو رہنے دے مجھے ظلمتِ جاں میں

ڈھونڈے گا کہاں چاندنی راتوں کا کفن تُو

دراصل میں یہ کہنا چاہتی ہوں کہ ہمیں موسم کی حدت سے گھبرا کررنگوں سے منہ نہیں موڑ لینا چاہئے بلکہ ہم میں اتنا شعور یا سمجھ بوجھ ہونی چاہئے کہ موسم کی مناسبت سے اپنے لباس میں کن رنگوں کا استعمال کریں، اسی سمجھ بوجھ کا نام فیشن ہے ۔

رنگوں کے بغیر تو زندگی نا مکمل ہے ، آپ اپنے لئے مشرقی ملبوسات کا انتخاب کریں یامغربی ملبوسات کا ، ساری گفتگو اور انداز رنگوں پر آ کر منتج ہوتے ہیں ۔ میں نے موسم کی شدت اور رنگوں کے انتخاب کو اپنی کولیکشن کے ذریعے سمیٹنے کی کوشش کی ہے ۔ آپ کو میرے ملبوسات میں سٹائل ، کلرز اور فیشن سب کا حسین امتزاج ملے گااور یہ کنفیوژن یا مشکل دور ہو جائے گی کہ موسم گرما میں آپ گہرے رنگوں کے بناء فیشن نہیں کر سکتیں ،امید ہے آپ کو میری کولیکشن ضرور پسند آئے گی ۔‘‘

گذشتہ شماروں سے پڑھیں

اُسے کہنا !

کسی بھی خوبصورت شام میں ملنے چلا آئے

...

مزید پڑھیں

نیتِ شوق بھر نہ جائے کہیں

...

مزید پڑھیں

بدن میں آگ ہے چہرہ گلاب جیسا ہے

...

مزید پڑھیں