☰  
× صفحۂ اول (current) دین و دنیا دنیا اسپیشل انٹرویوز عالمی امور سنڈے سپیشل فیشن کچن کی دنیا خصوصی رپورٹ کھیل کیرئر پلاننگ ادب
یوں ترے حُسن کی تصویر غزل میں آئے ۔۔۔۔۔

یوں ترے حُسن کی تصویر غزل میں آئے ۔۔۔۔۔

تحریر : طیبہ بخاری

08-04-2019

ناصر کاظمی نے کیا خوب کہا تھا کہ

یوں ترے حُسن کی تصویر غزل میں آئے

جیسے بلقیس سلیماں کے محل میں آئے

جبر سے ایک ہوا ذائقہ ہجر و وصال

 

اب کہاں سے وہ مزا صبر کے پھل میں آئے 

ہم سفر تھی جہاں فرہاد کے تیشے کی صدا 

وہ مقامات بھی کچھ سیر جبل میں آئے 

یہ بھی آرائش ہستی کا تقاضا تھا کہ ہم 

حلقہ فکر سے میدان عمل میں آئے 

ہر قدم دست و گریباں ہے یہاں خیر سے شر 

ہم بھی کسی معرکہ جنگ و جدل میں آئے 

زندگی جن کے تصور سے جلا پاتی تھی 

ہائے کیا لوگ تھے جو دام ِ اجل میں آئے 

انعم کہتی ہیں ’’ساون کے موسم میں خوبصورت ،دیدہ زیب اور کھِلے کھِلے رنگ آپ کی شخصیت کو نکھارنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔لباس موسم سے ہم آہنگ ہو من پسند ہو تو موسم کی شدت آپ کو متاثر نہیں کر پاتی ۔ کھلے کھلے رنگ ہوںتو موسم کی شدت رنگینی میں بدل جاتی ہے ۔ آج کل موسم کا کچھ پتا نہیں چلتا ، کبھی دھوپ تو کبھی بارش اور حبس کی تو بات ہی نہ کیجئے ۔ اس موسم کی شدت سے بچنے کیلئے خواتین کی توجہ ملبوسات کی تیاری پر تھوڑی کم ہو جاتی ہے ۔

جبکہ میری رائے میں یہی تو وہ وقت ہے کہ جب خواتین کو اپنی شخصیت اور ملبوسات پر پوری توجہ دینی چاہئے ۔موسم کی شدت سے گھبرانے کی بالکل کوئی ضرورت نہیں ، آپ بہترین سلیکشن اور خوبصورت رنگوں کے استعمال سے موسم کی شدت کا مقابلہ کر سکتی ہیں ۔ میں نے موسم اور فیشن کے اعتبار سے آپ سب کیلئے کچھ دلفریب رنگوں اور سٹائلز کا انتخاب کیا ہے امید ہے آپ کو یہ سب بہت پسند آئیں گے ۔‘‘

 

 

 

گذشتہ شماروں سے پڑھیں

مرے ہم سفر !تری نذر ہیں مری عمر بھر کی یہ دولتیں

مرے شعر ، میری صداقتیں ...

مزید پڑھیں

عیدالفطر ہو یا عید الاضحی ہر دل سے ایک ہی دعا نکلتی ہے کہ

اللہ کرے کہ تم کو مبارک ہو روز عید

مزید پڑھیں

آمنہ کو پروین شاکر کی یہ غزل بہت پسند ہے

چہرہ میرا تھا ، نگاہیں اُس کی ...

مزید پڑھیں