☰  
× صفحۂ اول (current) دین و دنیا رپورٹ متفرق خصوصی رپورٹ شخصیت فیشن سنڈے سپیشل کچن کی دنیا کھیل انٹرویوز خواتین روحانی مسائل
دنیا بھر میں 45کروڑ افراد ذہنی امراض میں مبتلا

دنیا بھر میں 45کروڑ افراد ذہنی امراض میں مبتلا

تحریر : حکیم قاضی ایم اے خالد

10-13-2019

ایک تحقیق کے مطابق ہر4 بالغ افراد میں سے1 اور ہر 10 بچوں میں سے 1کو دماغی امراض یا مسائل کا سامنا ہے۔ کسی ایک انسا ن کے دماغی مرض سے صرف وہی نہیں بلکہ اس سے وابستہ دیگر افراد بھی متاثر ہوتے ہیںپاکستان سمیت دنیا بھر میں ذہنی و نفسیاتی مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے ۔عالمی ادارہ صحت کا کہناہے کہ دنیا بھر میں45کروڑ افراد کسی نہ کسی دماغی عارضے میں مبتلا ہیںجن میں سب سے زیادہ پائی جانے والی دماغی بیماریاں ڈپریشن اور شیزو فرینیا ہیں۔

دنیا میں نفسیاتی عوارض میں مبتلا مریضوں کی تعداد کے لحاظ سے چین پہلے نمبرپر ، بھارت دوسرے، امریکہ تیسرے،برازیل چوتھے، روس پانچویں، انڈونیشیاچھٹے،پاکستان ساتویں، نائیجریا آٹھویں، بنگلہ دیش نویں اور میکسیکو دسویں نمبر پر ہے۔ وطن عزیز ذہنی امراض کے لحا ظ سے صف اول کے 10ممالک میں شامل ہے جو ایک تشویشناک بات ہے۔ اِس مشینی اور جدیددور میں بہت ساری آسائشوں اور سہولیات کے باوجود انسان کسی نہ کسی مسئلے کی وجہ سے ڈپریشن یا ذہنی امراض کا شکارہے۔

ایک اندازے کے مطابق اِس وقت پاکستان میں 50ملین یعنی 5 کروڑافراد مختلف قسم کے نفسیاتی امراض اور ڈپریشن کا شکار ہیں۔مزاج کا چڑچڑاپن، غصہ، اداسی، نیند اور بھوک کا ڈسٹرب ہونا، وزن میں کمی بیشی، یکسوئی واعتماد میں کمی اور مایوسی کا در آنا ذہنی صحت کے متاثر ہونے (خصوصاًاسٹریس‘ڈپریشن )کی علامات ہو سکتی ہیں۔ مختلف پھولوں پھلوں اور ہربز(جڑی بوٹیوں) کی خوشبو ذہنی امراض خصوصا ذہنی دباؤ(اسٹریس ‘ڈپریشن‘شیزوفرینیا) کو نمایاں طور پر کم کرتی ہے۔ پھلوں میں لیموں آم اور مالٹے کی خوشبو ذہنی دباؤ وکے امراض کم کرنے میں مدد دیتی ہے۔ ہربلز میں پودینہ جبکہ پھولوں میں گلاب کی خوشبو انسان کے ذہنی و جسمانی کام کرنے کی صلاحیت میں اضافہ کرتی ہے۔

سائنسی ترقی نے جہاں انسان کو ان گنت سہولتیں اور آسائشیں فراہم کی ہیں وہاں ذہنی دباؤ اور نفسیاتی و ذہنی امراض میں بھی انتہائی اضافہ ہوا ہے۔ زندگی کی تیز رفتاری اور کم تر وقت میں بہت کچھ حاصل کر لینے کی خواہش ذہنی دباؤ میں اضافہ کر رہی ہے دنیا بھر میں ایسے افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے جو کسی نہ کسی حوالے سے ذہنی امراض کا شکار ہیں۔ بعض خوشبوئیں سونگھنے سے ذہنی امراض سے تعلق رکھنے والے مخصوص جینز متحرک ہو جاتے ہیں اور خون کی کیمسٹری میں ایک مخصوص تبدیلی واقع ہوتی ہے جس سے ذہنی امراض خصوصاً ذہنی دباؤ کم کرنے میں بہت مدد ملتی ہے۔

خوشبوئوں کے اس مہکتے ہوئے علاج کو اروما تھراپی کہتے ہیں جو دنیا بھر میں مقبول ہو رہا ہے ۔پھلوں میں لیموں، آم اور مالٹے کی خوشبو ذہنی دباؤ اور ذہنی امراض کم کرنے میں مدد دیتی ہے ہربلز میں پودینہ جبکہ پھولوں میں گلاب کی خوشبو انسان کے ذہنی و جسمانی کام کرنے کی صلاحیت میں اضافہ کرتی ہے۔ اس کی خوشبو سے یادداشت میں اضافہ ہوتا ہے ۔الزائمر کے مرض سے بچاؤ میں انتہائی موثر ہے۔

الزائمر ایک دماغی بیماری ہے جس سے بہت آہستگی کے ساتھ متاثرہ فرد اپنی یادداشت کھو دیتا ہے۔ رات کے اوقات میں گلاب کی خوشبو سونگھنے سے افراد کی ذہنی صحت پر انتہائی مفید اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ انسانی دماغ کا اہم حصہ’’ ہیپو کیمپس‘‘ یادداشت کا ذخیرہ ہوتا ہے۔ رات کے وقت خوشبو سونگھنے سے دماغ کے اس اہم حصہ کی کارکردگی بڑھ جاتی ہے اور انسان کی یادداشت کو مضبوط بنا دیتی ہے۔ گلاب کی خوشبو نیند لانے میں بھی فائدہ مند ہے اور اچھی نیند جسمانی و ذہنی صحت کے لیے انتہائی ضروری ہے۔

گذشتہ شماروں سے پڑھیں

0 2نومبر کا دن بچوں کے عالمی دن کے طور پر منایا جاتا ہے، اس روزاقوام متحدہ نے بچوں کے حقوق کا عالمی معاہدہ ’’چائلڈ رائٹس کنونشن ‘&ls ...

مزید پڑھیں

یہ تاریخی فوارہ ایوب خان نے امریکہ کے صدر آئزن ہاور کے استقبال کے لیے بنوایا تھا جنہوں نے صدر پاکستان کی دعوت پر دسمبر 1959ء میں پاکستان پ ...

مزید پڑھیں

ایک بھارتی جریدے سے پتہ چلا کہ بھارتی ریاستوں، شہروں اور دیہات میں مسلمانوں نے ناصرف ادارے قائم کئے تھے بلکہ ہندوئوں اور دوسرے مذاہب کے ...

مزید پڑھیں