☰  
× صفحۂ اول (current) سنڈے سپیشل(طیبہ بخاری ) سپیشل رپورٹ(طاہر اصغر) دنیا اسپیشل(صہیب مرغوب) دین و دنیا(ڈاکٹر آصف محمود جاہ ) دین و دنیا( مولانا حافظ اسعد عبید الازھری) دین و دنیا(امیر محمد اکرم اعوان) دین و دنیا(ڈاکٹر لیاقت علی خان نیازی) کچن کی دنیا() فیشن(طیبہ بخاری ) کھیل(عبدالحفیظ ظفر) خواتین() خواتین() متفرق(رضوان عطا) کیرئر پلاننگ(پرفیسر ضیا ء زرناب) ادب(الیکس ہیلی ترجمہ عمران الحق چوہان)
Dunya Magazine
Loading...
Loading...
Loading...

دیگر خصوصی مضامین اور مستقل سلسلے

٭:کائونٹ ڈائون شروع ۔۔۔ ٭:دہلی میں آج الیکشن’’ دنگل‘‘ ہو گا دیکھیں چاندنی چوک میں کس کی ’’چاندی‘‘ ہوتی ہے ۔۔۔ ٭:اب کی بار پھرمسلمان امیدوار کم ایشوز اور مسائل زیادہ ۔ ٭:مہاراشٹر میں نکسل باغیوں کے حملے میں 16پولیس کمانڈوز مارے گئے ۔۔۔ ٭:دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کو بھی تھپڑ پڑ گیا۔۔۔

مزید پڑھیں

ت کے نام پر قتل کسی بھی صوبے کی ثقافت کا حصہ نہیں لیکن یہ ناسور سماج کا حصہ ہے،ایک تلخ حقیقت ہے جسے قبول کیا جانا چاہیے۔ اس سلسلے میں قانون سازی اس وقت تک غیر موثر رہے گی جب تک ان واقعات کے مقدمات درج نہیں ہوتے۔ پاکستان میںغیرت کے نام پر قتل پہلے مقامی مسئلہ تھا،

مزید پڑھیں

50لاکھ نئے گھروں کی تعمیر کاہر جگہ چرچا ہے۔ کبھی لگتا ہے کہ لوگوں کو راتوں رات چھت میسر آجائے گی، کبھی سب کچھ سہانے سپنے کی طرح دکھائی دیتا ہے۔ اپنا گھر مہیا کرنے کے وعدے ہر زمانے میں ہوئے مگر درجنوں لاکھ لوگ آج بھی چھت کو ترس رہے ہیں۔

مزید پڑھیں

حضور نبی اکرمؐ نے ارشاد فرمایا کہ رمضان المبارک بہت ہی بابرکت اور فضیلت والا مہینہ ہے۔ یہ صبر و شکر اور عبادت کا مہینہ ہے جس میں عبادت کا ثواب ستر درجے بڑھ جاتا ہے۔ روزے کے دوران کسی قسم کی چغل خوری، جھوٹ، گالی گلوچ، غصہ اور بدکلامی سے پرہیز ضروری ہے۔

مزید پڑھیں

حضرت عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا’’ نفع کمانے والے کو رزق دیا جاتا ہے اور ذخیرہ اندوزی کرنے والے پر لعنت ہوتی ہے۔‘‘ (رواہ ابن ماجہ والدارمی)ہمارے معاشرہ میں ہر سطح پر یہ عجیب وغریب وباپھیل چکی ہے کہ جہاں رمضان المبارک قریب آیا وہاں عام ضرورت کی اشیاء کی قلت پیدا کردی جاتی ہے اور پھر منہ مانگے دام وصول کیے جاتے ہیں۔

مزید پڑھیں

روزہ روحانی تربیت اور حصولِ رحمت کے لیے ایک خاص اہتمام ہے ۔روزے کی فرضیت ایک خاص مقصد تقویٰ کے حصول کے لیے ایک تربیتی پروگرام ہے،تقویٰ ایک ایسی کیفیت کا نام ہے جو انسان کو اللہ کی نافرمانی سے روک دے اور عملاً اللہ کی عظمت سے آشنائی نصیب ہو یعنی انسان کا ہر عمل اس بات کی گواہی دے کہ اسے اللہ سے تعلق عبدیت حاصل ہے اور وہ اپنی حیثیت کے مطابق اللہ کی عظمت سے آشنا ہے گویا روزہ وہ نعمت ہے جس کے نتیجے میں مومن کو اللہ اور اللہ کے رسول ﷺ سے ایک ایسا تعلق نصیب ہو جائے جو غلط ہاتھ کو اُٹھنے اور قدم کو چلنے سے تھام لے اور حدود اللہ سے تجاوز نہ کرنے دے ۔

مزید پڑھیں

ام المومنین حضرت خدیجۃ الکبریؓ کی فضیلت کے بارے میں رمضان المبارک میں تذکرہ اس لحاظ سے اہم ہے کہ آپؓ نے 10 رمضان سن 10 نبوت میں وفات پائی۔ ام المومنین حضرت خدیجۃ الکبریٰ رضی اللہ عنہا مکہ کی ایک نہایت معزز اور دولت مند خاتون تھیں۔ آپؓ کا لقب طاہرہ، اُمّ ہند کنیت، رسول اکرم صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم کی پہلی زوجہ محترمہ جو قریش کے ممتاز خاندان اسد بن عبدالعزیٰ سے تھیں۔ (بحوالہ: سیرۃ خیرالانام صلی اللہ علیہ وآلہٖ وسلم، اُردو دائرہ معارف اسلامیہ، پنجاب یونیورسٹی، صفحہ 579)۔

مزید پڑھیں

پاپڑی میدہ اجزاء:چھنا ہوا میدہ1/2پیالی،چھنا ہوا آٹا1/2پیالی،پھینٹی ہوئی دہی ایک بڑا پیالا،اُبلا آلو(چھوٹے چوکور ٹکڑے) ایک عدد،بوندی دو کھانے کے چمچ،پسی سونٹھ چار کھانے کے چمچ،اُبلے کابلی چنے دو کھانے کے چمچ،انار دانہ ایک کھانے کا چمچ،نمک حسب ذائقہ،پسی لال مرچ حسب ذائقہ،چاٹ مصالحہ حسب ذائقہ،تیل حسب ضرورت ترکیب:ایک پیالے میں1/2پیالی چھنا ہوا میدہ،1/2پیالی چھنا ہوا آٹا اور دو کھانے کے چمچ تیل ڈال کر پانی سے گوندھیں۔اب کڑاہی میں حسب ضرورت تیل گرم کر لیں،پھر آٹے کی روٹی بیل کر چھوٹی گول پاپڑیاں کاٹ لیں اور انہیں گرم کیے ہوئے تیل میں گولڈن تل کر نکا ل لیں۔اس کے بعد ایک بڑا پیالا پھینٹی ہوئی دہی میں پاپڑوں کو لپیٹ کر پلیٹ میں رکھتے جائیں،پھر اُن پر ایک عدد اُبلے آلو کے چھوٹے چھوٹے چوکور ٹکڑے کاٹ کر ڈال دیں ساتھ میں دو کھانے کے چمچ بوندی،دو کھانے کے چمچ اُبلے کابلی چنے،حسب ذائقہ نمک،حسب ذائقہ پسی لال مرچ اور حسب ذائقہ چاٹ مصالحہ بھی شامل کر دیں۔اب ان کے اوپر چار کھانے کے چمچ پسی سونٹھ پھیلا دیں۔اس میں دھنیے کی ہری چٹنی بھی ڈال سکتے ہیں۔آخر میں ایک کھانے کاچمچ انار دانہ سے سجا کر چٹ پٹی پاپڑی چاٹ سروکریں۔

مزید پڑھیں

معروف ماڈل رایان کہتی ہیں کہ ’’رمضان المبارک میں عبادات میں اضافہ ہو جاتا ہے اور اسکے ساتھ ساتھ رشتہ داروں اور دوستوں کے ہاں افطار پارٹیوں کاسلسلہ بھی شروع ہو جاتا ہے ۔

مزید پڑھیں

پاکستانی کرکٹروں کے دلچسپ اور اہم واقعات کچھ کم نہیں ہیں۔ بعض اوقات تو ایسے ہیںکہ قہقہہ لگانے کو جی چاہتا ہے۔ بعض اوقات تلخیوں سے بھرپور ہیں۔ ایک دوسرے کے خلاف سنگین الزامات، بے فائیوں اور بدعہدیوں کے طعنے، سازشی کہانیاں، مفادات کی جنگ، یہ سب کچھ ان واقعات کا حصہ ہیں۔

مزید پڑھیں

ماہِ رمضان کا آغاز ہو چُکا ہے اور افطار کے وقت کس کا دل نہیں کرتا کہ دستر خوان پر پھل نہ سجے ہوں۔ اگر تو آپ رمضان کے دوران اپنے جسم کو صحت مند بنانا چاہتے ہیں تو بازار میں عام دستیاب ان چند پھلوں کو افطار میں استعمال کرنا اپنی عادت بنا لیں جن کے فوائد آپ کو حیران کر دیں گے۔

مزید پڑھیں

اگر آپ کے گھر رات کے کھانے یا افطاری پر مہما ن آ رہے ہیں اور مصروفیت کے باعث آپ گھر کی صفائی نہیں کر سکیں تو اس کے لیے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ۔آپ45منٹ سے بھی کم وقفے میں اپنا گھر مہمانوں کی آمد سے قبل صاف کر سکتی ہیں۔

مزید پڑھیں

عالمی تاریخ میں یکے بعد دیگرے کئی مالیاتی بحران آئے۔ ان میں سے بیشتر مختصر اور کم شدید تھے جن کا اثر وسیع پیمانے پر محسوس نہیں کیا گیا۔ لیکن بعض کے اثرات پورے براعظم یا دنیا بھر میں ہوئے۔ ان کے نتیجے میں بے روزگاری اور مہنگائی بڑھی اور لوگوں کی ایک بڑی تعدادکو ضروریات زندگی پوری کرنے میں مشکلات پیش آئیں۔ ذیل میں پانچ سب سے تباہ کن مالیاتی و معاشی بحرانوں کو مختصراً بیان کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں

کسی بھی فرد کی ذاتی اور عملی زندگی میں کامیابی کی بنیاد اُس کی مسائل کو حل کرنے کی صلاحیت،مجموعی ذہانت، اعلیٰ فیصلہ کرنے کی طاقت اور کارکردگی پر ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں ادارے چاہے تعلیمی ہوں یا صنعتی ، اِن میں کامیابی اور ترقی میں سب سے اہم کردار فرد کی کارکردگی کا ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں

’’تم نے اتنی جلدی گنتی کہاں سے سیکھ لی؟ ‘‘ ’’پاپی، آپ دیکھیے گا میں لوہار کا کام کیسے کرتا ہوں۔ لیکن اب ہمیں اس وقت کیا کرنا چاہیے؟‘‘ ’’ہم دونوں مل کر سب کر لیں گے۔‘‘جارج نے خوش ہو کر کہا۔’’ بس اس گھرانے کو کہیں پہنچا لیں۔ پھر ہم شمال چلے جائیں گے۔ وہاں ہمارے بچے اور پوتے پوتیاں آزاد پلے بڑھیں گے۔ جیسا کہ ہونا چاہیے۔

مزید پڑھیں

حکایت شیخ سعدیؒ

ابو ادریس خولانی نے بیان کیا ہے کہ میں نے حضرت امام محمد بن ادریس شافعی ؒ کو ارشاد فرماتے سنا کہ کوئی موٹا شخص دنیا میںکامیاب نہیں ،ماسوائے محمد بن حسن کے۔ عرض کی گئی کیوں؟ فرمایا عقلمند دو خصلتوں سے خالی نہیں ہوتا یا تو اسے آخرت اور انجام کی فکر ہوتی ہے یا دنیا اور اپنی معیشت کا غم۔ غم کی حالت میں چربی جمع نہیں ہو سکتی۔ پھر فرمایا زمانہ قدیم میں ایک بادشاہ تھا۔ اس کا جسم بہت ہی بھاری بھرکم تھا۔ موٹاپے کی وجہ سے بے چارہ حرکت کرنے سے قاصر تھا۔ اس نے حکماء کو جمع کیا اور کہا کوئی ایسا حیلہ کرو کہ میرا جسم تھوڑا پتلا ہو جائے۔ لیکن کوئی علاج کارگر نہ ہوا۔ اس دوران اس کے دربار میں ایک حاذق طبیب کو لایا گیا اس کے فن کا شہرہ دور دور تک تھا۔ اس نے بادشاہ کے جسم کا معائنہ کیا بادشاہ نے اسے وافر انعام و اکرام کا لالچ دیا۔ وہ طبیب کہنے لگا آپ کا اقبال سلامت رہے۔ میں حکمت و طب کے ساتھ ساتھ علم نجوم سے بھی واقفیت رکھتا ہوں آپ مجھے ایک رات کی مہلت دیں، میں آپ کی قسمت کا مشاہدہ کروں گا اور دیکھوں گا کہ کون سی دوا آپ کو موافق رہے گی۔ اگلے دن وہ بادشاہ کے پاس آیا اور دہائی دینے لگا امان! امان! بادشاہ سلامت نے کہا تمہیں امان ہے (تمہیںکچھ نہیں کہا جائے گا)۔ جان بخشی کے وعدہ پر اس حکیم نے بادشاہ سے گزارش کی کہ میںنے آپ کے زائچہ میں غوروفکر کیا تو پتہ چلا کہ آپ کی مبارک زندگی میں صرف ایک ماہ باقی رہ گیا ہے۔ اگر آپ پسند فرمائیں تو کل میںآپ کا علاج کروں گا۔ اگرآپ کومیری بات پر اعتبار نہیںتو مجھے اپنے پاس روک لیجئے۔ اگرمیری بات سچی ہوئی تو مجھے رہا کر دیا جائے وگرنہ مجھ سے قصاص لیا جائے۔ بادشاہ نے اس کی گرفتاری کا حکم دے دیا۔ دوسری طرف خود بادشاہ ہر قسم کی عیش و عشرت چھوڑ چھاڑ کر گوشہ نشین ہو گیا۔ جوں جوں ایک ایک دن گزر رہا تھا اس کا غم بڑھتا جا رہا تھا۔ حتیٰ کہ وہ بہت لاغر ہو گیا۔ اس کا گوشت کم ہو گیا۔ جب اٹھائیس دن گزرگئے تو اسے اپنے سامنے حاضر کرنے کا حکم دیا اور پوچھا اب بتائو میرا ستارہ کیا کہتا ہے؟ اس نے کہا میرے پاس غم کے سوا آپ کی بیماری کا کوئی علاج نہ تھا۔ میںاس بہانے کے سوا اور کسی طرح بھی آپ کو غمگین نہیں کر سکتا۔ چنانچہ میںنے یہ عذر تراشا۔ اس طرح آپ کی فالتو چربی ختم ہو گئی۔ بادشاہ نے خوش ہو کر اسے انعام و اکرام سے نوازا۔

مزید پڑھیں

سکارف + عبایا ، پردہ اور عبادت ساتھ ساتھ

دنیا فیشن

ماڈل : رایان
فوٹو گرافی : عامر چشتی
میک اپ : K R CREW